رات کی ڈاءری سویرے سویرے.

٢٨ویں روزے کا آغاز هو رها هے.الوداع الوداع ماھ رمضان.بس یهی صداییں هیں جو دل اداس کیے دے رهی هیں. الله هم سب په نیکوں کے نیک روزوں کے صدقے رحم و کرم فرما. آمین.

 Image

بلدیہ عظمیٰ کے افسران پیر کو حیران رہ گئے جب نئے ایڈمنسٹریٹر ثاقب سومرو ادارے کے صدر دفتر سوک سینٹر صرف 15 منٹ کے لیے آئے چند منٹ کا ایک اجلاس کرکے کراچی میں بارشوں کے بعد پیدا ہونے والی بدترین صورتحال کے حوالے سے کوئی فیصلہ کیے بغیر چلے گئے.

اس صورتحال پر ادارے کے افسران نے حیرت کا اظہار کیا باخبر  مخبری هے که نئے ایڈمنسٹریٹر ثاقب سومرو جن کے پاس ایڈمنسٹریٹر کا اضافی چارج ہے وہ منگل کی دوپہر سوک سینٹر آئے اور ادارے کے تمام شعبوں کے سربراہوں کا اجلاس طلب کیا، اجلاس کے حوالے سے توقع تھی کہ شہر میں میونسپل ایمرجنسی نافذ کرکے بارشوں کے بعد پیدا صورتحال کے ازالے کے لیے ہنگامی ایکشن پلان کا اعلان کیا جائے گا اور شہریوں کو فوری بلدیاتی سہولیات کی فراہمی کے لیے سخت اقدامات کیے جائیں گے۔ تاہم بلدیہ عظمیٰ کے نئے ایڈمنسٹریٹر نے مجموعی طور پر 8 منٹ کے تعارفی اجلاس میں افسران کو مشورہ دیا کہ وہ کسی سے نہ ڈریں وہ کسی کا تبادلہ نہیں کریں گے سب مل جل کر کام کریں،بدھ کو آخری دن ہے اس کے بعد عید کی چھٹیاں ہیں اس دوران وہ کسی کو تنگ نہیں کریں گے اب ہماری عید کے بعد ملاقات ہوگی،ذرائع نے بتایا کہ اجلاس کے بعد افسران نئے ایڈمنسٹریٹر کے جملوں پر ہنستے رہے کہ انھوں نے اجلاس میں بارش کے حوالے سے کوئی فیصلہ تو درکنار ایک جملہ تک نہ بولا اور افسران کو عید کی چھٹیوں کی نوید سنا کر چلے گئے۔

Image

شھروں کی دلھن شھر کراچی کے ایڈمنسٹریٹر په خدا کی مار هو. که عید میں دو دن هیں اس افسر کو یونیورسٹی روڈ ، شاھراء فیصل ، کورنگی کراسنگ ، اپر گذری په تالاب نظر نھیں آرهے . اور اگر اپنی ناکامیاں چھپانی تھیں تو سٹی گورمنٹ کے بنایے هویے نالوں کو ایمرجنسی میں صاف. کروالیتے لیکن نھیں صاحب یه تو کهتے هیں پچھلی حکومت میں بھی 4 چار دن پانی کھڑا رهتا تھا کویی بات نھیں بس گڈھے بھر دو.یه افسر دست راست هیں ٹپی صاحب کے اس لیے ان کو باون کی چھوٹ هے .

دو دن پهلے شالیمار ٹرین میں جو حادثه هوا تھا اسی شالیمار ٹرین کی بوگی نمبر 4680 میں 28جولایی کو بھی دھماکا هواتھا لیکن ایس ایچ او نوابشاھ ریلوے پولیس نے اپنی حرامکاری کو چھپانے کے لیے غلط ابتدایی رپورٹ بنایی اور اسے کمپریسر پٹھنے کا دھماکا رکارڈ کیا جب که حقیقت یه تھی که بم پانی کی ٹنکی میں فٹ تھا اور بوگی کی چھت کلی طور په ٹوٹ پهوٹ کا شکار هوگیی تھی.اگر ایماندارانه رپورٹ بنایی جاتی اور حفاظتی اقدامات کرلیے جاتے تو قیمتی جانیں بچایی جاسکتی تھیں. اس ایس ایچ او ریلوے کو فوری طور په معطل کرکے پوچھا جایے که کس کے کهنے په یه رپورٹ بنایی تھی. شالیمار کا حالیه دھماکه ٹوبه ٹیک سنگھ کی چک نمبر 51کی پٹری په هوا هے یه علاقه نیے گورنر پنجاب غلام سرور کا هے.لوگ تو اس دھماکے کو گورنر صاحب کی سلامی گردان رهے هیں.

چلتے چلتے کراچی میں رات گیاره سے باره کے درمیان چار دھماکے هویے تین ڈیفنس میں ایک گلشن میں.یه چاروں دھماکے بند دکانوں کے باهر نصب ٹایمر ڈیوایس سے کیے کویی نقصان نھیں هوا اور پولیس اسے بھتے کی وصولی کا چکر بتا رهی هے لیکن  مجھے دو سال پهلے کی اسی طرح کے چار سیریل بلاسٹ یاد آگیے جو منگوپیر بلدیه اور لیاری کی کچره کنڈیوں میں هوهے تھے وه ٹیسٹ هوا تھا اور پهر اسی ھفتے بڑے بلاسٹ.میرے منه میں خاک لیکن احتیاط پچھتاوے سے بھتر هے.عید سر په هے*

بتاریخ7اگست13 @junaid890

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s