اسلامی ھایی جیکرز

 1384010065486

آج با الآخر 40ساله کفر ٹوٹا آیی ایس پی آر نے دو ٹوک منور حسن صاحب صاحب کے بیان کی پرزور مذمت کی اور ان سے کهاگیا که وه معافی مانگیں. لگتا هے که 66/67سے قایم ورکنگ ریلیشن شپ کا اختتام هے.

یهی هونا تھا یهی هوا اور یهی هونا چاهیے تھا لیکن اب وقت هے که نظریه ضرورت کو پس پشت ڈال کر قوم کو حقایق بتایے جاییں.! حقایق تلخ هوا کرتے هیں لیکن اگر هم اس تلخی کو پی جاییں تو همارا مستقبل کبھی تلخ نه هو.

کهاں تو پاکستان کے قیام کی مخالفت هویی اور کهاں اچانک سے جماعت اسلامی جناح کی وفات کے بعد یه کهتی دکهایی دی که پاکستان بنایا مسلم لیگ نے تھا اور چلایے گی جماعت اسلامی. 48میں جب مسلم لیگ کشمیر کے جھاد کو فرض بنانے په تلی تو اس کی کھلم کھلا مخالفت جماعت اسلامی نے کی اور اس جنگ میں اگر کویی کشمیری بارڈر په لڑا تھا تو وه تھے قبایلی علاقے جنھوں نے جنگ کی.لیکن وقت گذرنے کے ساتھ ساتھ جماعت اسلامی نے اس کو بھی ھایی جیک کیا.اور ساده لوح قبایل کو بے وقوف بنایا جو وه آج تک بنا رهے هیں.

اب اقوام متحده میں جنگ بندی کے بعد ان کو سیاست کا موقع ملا که هم تو لڑتے لیکن لیاقت علی اقوام متحده میں بک گیا.اور وزیر اعظم لیاقت علی خان په باتیں کسیں.یهاں تک که بیگم رعنا لیاقت علی تک کو ان لوگوں نے نه بخشا.

مجھے اندازه هے که بھت خشک هوتا جارها هے لیکن یه هیں هی اتنے خشک.50 کی دھایی سے 1969تک جماعت اسلامی کی سرگرمیاں سوات میں بھت بڑھی رهیں کیونکه سوات پاکستان کا حصه 1969 میں بنا اس سے پهلے وهاں پاکستان کی سیاست و سیاسی جماعتوں کا وجود نھیں تھا.

اب یه یهاں سے باھر نکلے اور ان کا حدف کراچی تھا انھوں نے کراچی کے اردو اسپیکنگز کو بھٹو کے خلاف استعمال کیا.اسلام کےنام په بھٹو کو کافر کهنے والی جماعت اسلامی کیلیے کسی کو کافر کهنا کچھ نیا نھیں تھا یه کام تو وه قاعداعظم کو کافر اعظم قرار دے کر پهلے بھی کرچکے تھے.

سقوط ڈھاکه کے محرکات په غور کیا جایے تو سب سے بڑی وجه جماعت اسلامی تھی ان کی ورکنگ ریلیشن شپ کا آغاز هوچکا تھا یه چاهتے تو جو اصول آج مخالفین پاکستان یعنی طالبان کے لیے اپنارهے هیں یعنی بات چیت مذاکرات یه سارے دروازے بنگال کے مسلمان کے لیے کیوں نھیں کهولے گیے.بنگال میں تو مکتی باهنی کیلیے اپنے ورکنگ پارٹنر کو اکساکے البدر الشمس بنادی گیی.جنگ کے نعرے لگے اور هیڈ کواٹرز ان کی اوطاقیں بن گییں.سوال یه هے که آج خوارجیوں تکفیریوں قاتلوں کے لیے مذاکرات لیکن پاکستان زنده باد کا نعره مارتے بنگالیوں سے جنگ.90000 فوجی ان منافقوں کی منافقت و غلط مشاورت کی بدولت اسیر بنے.

کسی بڑے نے اب ان کا رابطه سی آیی اے سے کرادیا تھا اور پینٹاگون روس کو ٹریپ کرنا چاهتا تھا.جماعت اسلامی په امریکی انویسٹمنٹ هویی اور سوشلزم کے خلاف نعره جھاد کی تیاری کی بنیاد 73میں پڑی جب یه افغانستان میں اتارے گیے.

ھینری کیسنجر ، البرٹ فلنٹوف کی کتابیں اس بات کا ثبوت هیں که جماعت اسلامی و ربانی امریکی یاروں میں شمار هونے لگے تھے.امریکه کے لیے blue eye بننے کے بعد ضیا الحق په فرض عین تھا که ان کیلیے ایڈجسمٹ نکالی جایے سو نکالی گیی.

 1384097295083

بینظیر نواز شریف مشرف سب ان سے مستفید هویے جب امریکه پهرا تو یه پهرے لیکن اب پهلی بار اس ڈرامے میں وه دور آیا هے که محبوب رقیب اور محبوبه میں فاصلے بڑھے اور خدا ان فاصلوں کو سلامت رکهے کیونکه اس فاصلے میں اسلام و پاکستان کی بقاء هے.ورنه یقینا قاعد اعظم باریش هوجاییں گے.

پاک فوج زنده باد پاکستان پاینده آباد

بقلم. جے رضا زیدی Twitter handle @junaid890 بتاریخ 11 نومبر 2013

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

1 thought on “اسلامی ھایی جیکرز”

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s