جماعت اسلامی یا قومی ناسور.

Image

.جب تک کسی بھی شخص یا قوم کو اپنی غلطی یا کوتاهی کا احساس نھیں هوگا وه بھتری کی جانب نھیں بڑھےگا

.ادراک کسی بھی پهلو سے هو همیشه نتایج مثبت هونے چاهیں.

ادراک وتدارک کی منازل جب طے هوتی هیں تو اقوام عروج بام پاتی هیں

آج کافی دنوں کے بعد ایم کیو ایم کے مرکز 90 جا پهنچے.اس مھنگایی کے پر فتن دور میں جب کسی کے پاس بھی وقت نھیں ایسے میں هزاروں کارکنان دیوانه وار راسطے میں هی

جیے الطاف کے نعرے لگاتے نظر آگیے. لال قلعه پهنچتے هی کچھ ھی دیر میں اعلان هوا اور الطاف حسین بھایی کا ٹیلیفونک خطاب شروع هوا.

الطاف بھایی کا خطاب تلاوت کلام پاک و درود تنجینا سے شروع هوا.آغاز خطاب میں هی الطاف بھایی کا لحجه بھت دبنگ تھا جو که آخر تک سلامت رها.ایک جامع خطاب تھا که جس میں عسکری قیادت ، قانون نافذ کرنے والے اداروں اور موجوده قیادت و پریس کے سامنے وه حقایق رکهے گیے که جنھیں سن کے روح کانپ گیی.قاعد تحریک نے ایک فھرست میڈیا کے سامنے رکهی که جس میں جماعت اسلامی و ان کی طلبه تنظیم اسلامی جمیعت طلبه سے تعلق رکهنے والے لوگوںکے نام تھے اور یه تمام لوگ ڈرون حملوں میں مارے گیے.اور ایک ایسی فھرست سامنے رکهی جو که مختلف دھشت گردوں کے آله کاروں کی تھی جو که زنده پکڑے گیے.ان سب کا تعلق بھی جماعت اسلامی و اسلامی جمیعت طلبه سے تھا. یه فھرست جن ناموں په مشتمل هے

Image

*ارشد وحید :P.I.M.A سے وابسطه جماعت اسلامی کا کارکن.14مارچ2008 امریکی ڈرون حملے میں مارا گیا.

Image

*شبیر حسین: جامعه کراچی اسلامی جمیعت طلبه کا کارکن امریکی ڈرون حملے میں مارا گیا.

Image

*تنویرالاسلام: جامعه کراچی اسلامی جمیعت طلبه سے تعلق وزیرستان کے ڈرون حملے میں مارا گیا.

Image

*ظھیر امتیاز قدواءی:ناظم جامعه کراچی وزیرستان ڈرون حملے میں مارا گیا.

 Image

*کاشف حسین: جماعت اسلامی کے مستقل رفیق امریکی ڈرون کاشکار هوا

Image

*ثنا ءالله: اسلامی جمیعت طلبه کراچی سے تعلق یه بھی ڈرون کا شکار هوا.

Image

نعیم الحق: اس کا تعلق اسلامی جمیعت طلبه لاهور سے ثابت هوا یه بھی ڈرون کا نشانه بنا.

*عبدالرحمن شجاعت: اسلامی جمیعت طلبه این ای ڈی یونیورسٹی کا طالبعلم میران شاھ کے ڈرون حملے میں مارا گیا

اسی طرح آج ان لوگوں کے نام بھی طشت از بام هویے جن کے گھروں سے القاعده کے ایجنٹس پکڑے گیے یا ان کی پناھ میں رهے.جو که دوران تفتیش حساس اداروں کے سامنے آیی اس فھرست میں جی ایچ کیو حملے کاملزم ڈاکٹر عثمان جماعت اسلامی کےکارکن کا نام اور سری لنکن ٹیم حملے کے ملزم کانام بھی تھا جو که نیک محمد منصوره  کی پناھ میں رها.ان ناموں میں:
1.ملکه خاتون
2.خواجه برادرز
3.خالد شیخ
4.عطاءالرحمن
5.نعیم نور
6.احمد سجاد
و دیگر شامل هیں .یه تمام لوگ دنیا کے مطلوب دھشت گرد هیں جو که ھزاروں پاکستانیوں کے قاتل هیں.یه القاعده کے لوگ هیں جو جماعت اسلامی کے مرکز و ان کے اکابرین کے یهاں پناھ گذیر رهے یعنی جماعت اسلامی سے بالواسطه وابستگی رهی.

یه وه نام تھے جو قاعد متحده قومی موؤمنٹ نے گنوایے.اپنی خطاب میں ان ناموں کا مفصل ذکر کرکے واضح مطالبه کیا که “جماعت اسلامی و اس کی ذیلی تنظیم اسلامی جمیعت طلبه په فی الفور پابندی لگایی جایے.
#BANJIANDIJT”

اپنے مخصوص مدبرانه لهجے میں عسکری قیادت و قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مخاطب کرتے هویے کها که ھم آپ کو همیں غدار وطن نه جانیں هم آپ کو گلے لگاتے هیں.اسٹیبلشمنٹ کو تنبیه کی که باز آجاؤ هم نے پاکستان بنایا تھا هم پاکستان بچاییں گے.

کراچی میں جاری آپریشن کے مرکزی کرداروں کے بلاجواز چھاپوں په سخت ناراضگی کا اظھار کرتےنظر آیے.اور بھت کھل کے کها که اگر مھاجر قوم هتھے سے اکهڑی تو تم لوگوں کو سر جگه نه ملے گی.

ماؤں بھنوں سے بات چیت کے علاوه آپ نے معذورdisable افراد کے عالمی دن کے حوالے سے کارکنان کو خصوصی خیال رکهنے کی تلقین کی.اپنی تقریر کے آخر میں پهر ایک بار جماعت اسلامی په پابندی کے مطالبے کو دھرایا اور تقریر کا اختتام کیا.

یه خطاب ایک جامع خطاب تھا که اگر صرف اس خطاب میں کهی گیی بات کی گھرایی میں جایا جایے تو اندازه هوتا هے که یه عسکری و سول قیادت کو ایک گاییڈ لاین هے که دھشت گردوں اور ان کے معاونین سے قطعه تعلق کیا جایے.ورنه انجام صرف تباھی هے.

اس میں کویی شک هی نھیں ان تمام سیاسی ملاؤں کا بنیادی مقصد مملکت پاکستان کی تباھی هے.یه وه مخصوص طبقه فکر جو کراچی و لاهور کے بچوں کو تو ڈرون میں مروا رها هے لیکن ان کے اپنے بچے آکسفورڈ اور گلیسگو میں تعلیم حاصل کر رهے هیں. همیں یاد هے قاعد اعظم کو کافر اعظم اور پاکستان کو ناپاکستان کهنے لکهنے والی یهی جماعت اسلامی تھی.همیں بنگله دیش سے سبق حاصل کرنی چاهیے که وهاں بھی امن جب هی ممکن هوا جب جماعت اسلامی په پابندی عاید کی گیی.
Ban JAMAT E ISLAMI AND IJT

1384233787977

چلتے چلتے چوھدری نثار کی پریس کانفرنس یاد آگیی که جس میں که گیے که کچھ دھشت گرد ٹارگٹ کلر یهاں سے بھاگ کر وزیرستان چلے گیے هیں.اور پهر وزیرستان ڈرون حملے اور ان حملوں میں مرنے والے کون هیں ذکر اوپر آچکا هے.یهاں دال میں کچھ کالا هے یا دال هی کالی هے که کهیں کویی اشاره تو نھیں دیا تھا اور پهر ڈرون……اور تیسری طرف وه 12دن سے نیٹو کنٹینر نھیں گذرنے دے رهے کهتے هیں دن میں دھرنا هے رات کو لے جاؤ.یه کیا تماشه هے یه کیا مذاق هے.

بقلم،
جے.رضا.زیدی
ٹویٹر ھینڈل @junaid890

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

2 thoughts on “جماعت اسلامی یا قومی ناسور.”

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s