زرداری شریف و متاثرین زرداری شریف

Imageهمارا المیه یه هے که جب برسراقتدار طبقه لوٹ مار کے بازار گرم کیے هوتا هے تو هماری قوم اس کا سدباب کرنے کی بجایے گذرے حکمرانوں کو یه که کے یاد کررهی هوتی هے که اس سے تو بھتر وهی تھے.هم من حیث القوم بیوقوف ترین لوگ هیں بلکه هم قوم تو هیں هی نھیں هم تو ایک بے هنگم هجوم ھیں.اگر ایک قوم هوتے تو آج لٹیروں و چوروں کے یه ٹولے کیا بار بار هم په حکمران هوتے.

همارے یهاں جب بھی کسی حکومت سے اس کی نااھلی اس کی مس مینجمنٹ یا اس کی غلط طرز حکمرانی کے بارے میں سوال کیا جاتا هے تو وه پچھلوں کا قصور گنوادیتے هیں.اور جب پوچھا جاتا هے که یه سب کچھ صحیح کتنے دن میں هوگا تو جھلایا هوا جواب آتا هے ٹایم لگے گا.سالوں کی برایی هے دنوں میں کیسے ختم هوگی. اور اس طرح یه اگلے پانچ سال گذر جاتے هیں.

Image

میاں صاحب جن سے قوم کو بڑی توقع تھی. که موصوف صد فیصد made in Pakistan هیں.اور کچھ بھی هو بڑا فرق پڑے گا.لیکن جتنا مایوس میاں صاحب اور میاں صاحب کی ناعاقبت انگیز ٹیم نے کیا اتنا تو دور زرداری نے بھی مایوس نه کیا تھا.غضب خدا کا 6ماھ میں 11 غیر ملکی دورے.اور اکیلے کیسے جاییں دل هی نھیں لگتا اکیلے تو.لیکن دکھ تو اس بات کا هے که ان کے غیر ملکی دورے پاکستان  کے لیے هوتے هیں یا ان کے بزنس کے دور ے هوتے هیں.ڈاکٹر طاھرالقادری نے ڈاکٹر دانش کے پروگرام میں انکشاف کیا یا کم از کم میرے لیے انکشاف تھا که وزیراعظم کا حالیه دوره تھایی لینڈ بھی ان کا ذاتی بزنس ٹرپ تھا اور تھایی وزیر اعظم همارے وزیر اعظم کی کیی کاموں میں پارٹنر بھی هیں.جملے میں بھی کا استعمال اس لیے کیا گیا هے که وزیراعظم صاحب کے دوره چین کے موقع پر بھی ایسی خبریں گرم رهیں اور چین میں کسی ٹرین میں هونے والی ڈیل بھی ذیر بحث آیی.ملک میں کیسے هی فسادات هوں قتل و غارت هو همارے وزیر اعظم غیر ملکی دوروں په اور صدر مملکت لاپته رهتے هیں. صدر مملکت کیلیے تو مساجد سے اعلانات اور أخبارات کے اشتھارات بھی چپ رهے هیں.

ان کے نگینوں میں ایک منشی ٹایپ کی چیز بھی هے.جس کا بس نھیں چل رها که کس طرح لوگوں کی روٹی چھینی جایے.خزانے کا مالک بنادیا گیا هے اس منشی کو که اس شخص کو ٹیکس کلیکشن کرتے وقت صرف وه یاد رهتے هیں جو ٹیکس دیتے هیں.موصوف کی فکر مستقل increase of tax rate په محیط هے نه که increase of tax net په.ان کو پورا زراعت کا شعبه هی نظر نھیں آرها که جھاں سے نام کو بھی ٹیکس کلیکشن نھیں هے.حکومتی رتن بحرحال کنفیوژن کا شکار نظر آتے هیں. داخله کا محکمه لطیفه بن چکا هے.نیز حکومتی رتن اپنی پوری پوری آب و تاب کے ساتھ چمک رهے هیں.

سوال یه هے که کیا ملا چھ سات ماھ کے مستقل لولی پاپس کے بعد.ان کا رونا بھی پچھلوں په محیط هے.اور هونا بھی ایسا هی چاهیے کیونکه هم نے کیا سدباب کیا ان چوروں اور لٹیروں کے ٹولے سے جان چھڑانے کا؟ هم نے صرف چھروں کی تبدیلی چاهی اور جب صرف چھرے بدلتے هیں نظام نھیں بدلا کرتے تو تبدیلی بھی نھیں آتی.

اب سوال یه هے که نظام بدلے گا کون؟ تو اگر هم موجوده برسراقتدار طبقے سے کسی قسم کی توقع لگاتے هیں تو نری بیوقوفی هے سات مھینے انھوں نے نکال دیے هیں اور بقیه بھی یه هنی مون پیریڈ کے طور په گذاردیں گے.یه نظام یه نھیں بدلیں گے یه نظام توآپ اور هم بدلیں گے.اور یه هماری خواهشات کے نتیجے میں کسی قسم کی کویی تبدیلی نھیں آنے والی بلکه تبدیلی جب آیے گی جب ان برسراقتدار لوگوں کے گریبان پکڑے جاییں گے.جب یه بے هنگم هجوم ایک قوم بن کے ایک آواز بن کے کراچی سے خیبر تک اس مراعت یافته برسراقتدار طبقے کو للکارے گا تو یقین کیجیے ان کے ایوانوں میں لرزه برپا هوگا.اور آج مچایا گیا کهرام هی آنے والی نسل کی کامیابی کی ضمانت هوگا.
ورنه بیٹھے رهیے کیونکه کوسنوں سے کچھ هونے والا نھیں.وقت هے که کسی کو امام مانا جایے اور اقتداء حق کی جایے.چاهے امام امپورٹ کرنا پڑے لیکن اب ناگزیر هے.

چلتے چلتے ایک بڑی خبر kpk سے آیی هے که خیبر پختونخواه میں بلدیاتی انتخابات میں بایو میٹرک سسٹم کا استعمال کیا جایے گا.عمران خان کے اس بیان په بڑا شور هے سوشل میڈیا میں  لیکن همارا تو هنس ھنس کے حال هوگیا کونکه جھاں تک همیں یاد پڑتا هے الیکشن کرانا اور کیسے کرانا الیکشن کمیشن کا کام هے کے پی کے حکومت کا نھیں.اور یه ایک سسٹم هے کرکٹ کا گراؤنڈ نھیں که بیٹنگ آرڈر بھی میرا اور باؤلنگ آرڈر بھی میرا.اس لیے یه بایو میٹرک bio matric  نعره بھی کرپشن کے خاتمے یا ڈرون گرادینے والے کی طرح نعره هی هوگا.ٹینشن ناٹ.اب خان صاحب بھی یوتھ کے لیے زرداری شریف هوچکے هیں.

بقلم،
جے رضا زیدی
Twitter @junaid890

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

One thought on “زرداری شریف و متاثرین زرداری شریف”

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s