یہ خطرہ جان بهی ہیں تو خطرہ ایمان بهی

کل سے خون کهولا ہوا ہے جس کسی سے بات ہورہی ہے اس کا دل بهی صدمے سے دوچار ہے.چند دوست کچه ایسی رائے بهی رکهتے ہیں کہ یار افواج پاکستان کی طرف سے بمباری ہو یا کسی دهشت گرد حملے کی هلاکتیں.مر تو مسلمان ہی رہا ہے.یہ مرے یا وہ نقصان تو مسلمان کا ہے.

خون کهول گیا ان کے منہ سے یہ جملے سن کر جو ذی شعور لوگ ہیں کہ اگر بالفرض محال ہم دو منٹ کو کسی کو مسلمان تصور کرلیں تو کیا اگر قاتل مسلمان ہو اور مقتول بهی مسلمان تو کیا قاتل کو سزا نہ ہوگی اور کیا مسلمانوں کو قتال کا فساد کا معصوم عوام کو ماردینے کا حق ہے.اللہ نے کونسے پارے کی کونسی آیت میں اس قتال کا حکم دیا ہے جو اس وقت انتہا پسندوں کی طرف سے جاری ہے.ہماری یہ سوچ کہ مرنے والا مسلمان ہے سراسر غلط ہے کہ مفسرین و محدثین نے اسٹیٹ کے باغی سے جنگ کا حکم ثابت کیا ہے.ریاست کے باغی سے بالخصوص خوارجی باغی کو دیکہ کر اس کا سر کچلنے کا حکم ہے اور جنگ کے نتیجے هاته آئے باغیوں کیلیے سخت سزائیں ہیں.
دین اسلام کے پانچ مسالک حنفی، مالکی، شافعی، حنبلی اور فقہ جعفریہ کا اس پر مکمل اتفاق ہے کہ اسلامی ریاست کے خلاف خروج کر کے مسلح جدوجہد کرنا غیر اسلامی عمہے۔ل  تمام فقہی مذاہب کے مطابق ایسا عمل بغاوت کے زمرے میں آتا ہے۔ باغیوں کو کچلنادینی حکم کے عین مطابق ہے ۔ اسلامی ریاست کے خلاف منظم ہوکر طاقت کا استعمال قرآن و سنت کی رو سے حرام ہے۔ ایسے عمل کو بغاوت کہا جائے گا۔ باغی نیک نیتی کے ساتھ تاویل بھی رکھتے ہوں تو بھی ریاست اسلامی کے خلاف مسلح جدوجہد کرناغیر شرعی ہے۔ عوام کی غالب اکثریت اسلامی ریاست کے حکمرانوں سے شدیدنفرت کرتی ہو پھر بھی اسلام ایسے حکمرانوں کے خلاف مسلح حملوں کی اجازت نہیں دیتا۔ البتہ پرامن طور پر ان کے خلاف جمہوری جدوجہد کی جا سکتی ہے۔ اسلامی ریاست کے حکمران اگرصریحاً کفر پر اتر آئیں اور ان کے حق میں کوئی تاویل بھی نہ بچے تو پھر ان کے خلاف جہاد فرض ہو جاتا ہے.لیکن اس کے لیے بهی امت کا اجماع شرط قرار دیا گیا. اس سلسلے میں دور حاضر کے اکابرین امت کے مختلف فتاوے گوگل کرکے بهی حاصل کئے جاسکتے ہیں لیکن اس حوالے سے هم نے الفتاوی راضیہ کا مطالعہ کیا جس میں حضرت حنبل ، ابو حنیفہ و حضرت عبد الحق محدث دہلوی کے فتاوے موجود ہیں.
ہم نے پہلے بهی رقم کیا تها پهر کریں گے کہ رسول خدا نے فرمایا ‘ تم میں جو ان جو انہیں پائے وہ ان سے جنگ کرے ، جنگ کرے ، جنگ کرے. صحابہ نے عرض کی یارسول اللہ کن سے کہا خوارجیوں سے.صحابہ نے خوارجیوں کی نشانیاں پوچهیں تو آقائے دو جهاں نے فرمایا وہ عورتوں کا بچوں کا قتال کریں گے وہ تم میں سے ہوں گے ان کے شر سے مساجد بهی محفوظ نہ رہیں گی اور وہ قرآن کی ان آیات کا اطلاق مسلمانوں پہ کریں گے جو کفار کیلیے اتری ہوں. <ترمذی ، نسائی ، و جلالین جلد دوئم> <خوارجیوں کے حوالے سے اک مکمل باب موجود ہے جس پہ یہ صد فیصد پورے اترتے ہیں>Image.

اب یہ تو واضح ہوگیا کہ ان سے جنگ ہے اور یہ جنگ اب ہماری جنگ ہے.کیونکہ یہ جنگ تو ہماری جنگ تهی ہی نهیں.یہ تو امریکہ افغان جنگ تهی جو کہ 99 میں شروع ہوئی.پاکستان امریکہ کا اتحادی تها تو دنیا کے تمام ہی ممالک اس کے اتحادی تهے ایک پاکستان ہی اتحادی نہ تها.لاجسٹک سپورٹ سب اپنی اپنی کیپسٹی میں دے رہے تهے. پاکستان نے بهی دی. لیکن اس دهشت گردی کی جنگ کو جهاد تو صرف میرے پاکستانی ملا مافیا نے قرار دیا. کیا ہمارے دیس کے یہ نام نهاد موٹی گردن والے مولوی امام کعبہ سے زیادہ بڑے جهادی ہوگئے یا ان کو عربوں سے زیادہ عربی کی سمجه آگئی کہ جس کو سعودی مفتیان ، جامعہ الاظهر کے مفتیان فساد قرار دیں لیکن ہمارے لال پیلے نیلے مدرسے جهاد قرار دیں.

چلیں یہ نیلے پیلے بهی برداشت تهے لیکن آجکل یہ سلیو لیس شریعت کے نفاذ میں مشغول خیبر پختون خواه کی حکمران جماعت کی سیکریٹری اطلاعات بهی صلح حدیبیہ پہ بات کرتی نظر آئیں.حیرت ہے لیکن مثال دینے والے بهول جاتے ہیں اگر سهیل بن عمرو سے مذاکرات ہوئے تهے تو صلح حدیبیہ کی خلاف ورزی پہ رسول مقبول نے کیا کیا تها؟ مذاکرات کیے تهے یا جنگ کی تهی اور جنگ بهی ایسی کی کہ مکہ فتح کیا.اور صلح حدیبیہ سے پہلے ہی غزوہ بدر و غزوہ احزاب (خندق) ہوچکی تهیں مسلمانوں نے مذاکرات و صلح کی تهی تو برابری کی بنیادوں پہ اور جب وعدے کی صلح کی خلاف ورزی ہوئی تو مکہ کی طرف چڑهائی ہوئی.اور شاید محترمہ سارے امن معاہدے بهول گئیں جو صوفی محمد و پاکستانی قیادت کے بیچ ہوئے تهے.خدا ہم کو اپنے معاشرے میں سلیو لیس اور بے داڑهی طالبانائزیشن سے بچائے یہ خطرہ جان بهی ہیں تو خطرہ ایمان بهی
قدم بڑهاو نوازشریف ہم تمهارےساته ہیں
.

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

2 thoughts on “یہ خطرہ جان بهی ہیں تو خطرہ ایمان بهی”

  1. mujhe to pakistan me musalmaniat kehin nazar nahi ati jis se sabat ho ke ye koi Muslim socieyt hai? Pakistan me Islam sirf takatwaron, siasatdano ka hokar rehgaya hain, aam log to preshan hain jis governement depatment chale jao dra dhamka kar rishwat lete hain, chakar par chakar lagwate hain, ensaniat ke leye mushkalat peda krte hain, ensaniat ki tohin krte hain. Zalimo ka hisab zulam ke sath zalim hi leta hai!!!!

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s