خاک ہوجائیں گے ہم تم کو خبر ہونے تک

IMG_20150301_204617_5229

صبح کم وبیش ساڑھے گیارہ بجے دھویں کے گھنے بادلوں نے توجہ اپنی جانب مبذول کروائی۔پہلے تو ہم اہل محلہ سمجھے کہ کہیں کچرہ جل گیا لیکن بڑھتی آگ کے شعلے دیکھ کر بھاگے تو پتا چلا کہ گلشن اقبال بلاک ۱۳بی المصطفی میڈیکل سینٹر سے تیرہ ڈی کو جاتے راستے میں باونڈری وال میں جو کچی آبادی ہے اس کو آگ نے گھیر لیا ہے۔ آہ و بکاء کا اک عالم تھا جو ہم نے جائے وقوعہ پہ دیکھا۔


لوگ دیواریں توڑ توڑ کر باہر نکل رہے تھے تو کسی کے بچے اندر آگ میں پھنسے تھے۔ایسے میں برشین گیس کے سیلنڈر پھٹنے کا ذوردار دھماکہ ہوا۔ہم سے کچھ ہی فاصلے پہ ایک بوڑھا بے ہوش پڑا تھا۔چند ہی منٹوں میں کے کے ایف و چھیپا ایمبولینسز بھی پہنچ گئیں۔متحدہ قومی موؤمنٹ کے کارکنان اور المصطفی میڈیکل سینٹر کے خدمتگار لوگوں کو آگ میں سے نکالنے کی سعی کرتے نظر آئے۔لیکن فائر بریگیڈ کا کچھ پتا نہیں تھا کمپلین رجسٹرڈ کرائے پچیس منٹ کا عرصہ گذر چکا تھا۔ایک ماں چیخ رہی تھی کہ میرا بچہ اندر رہ گیا ہے۔تو ایک لڑکے کو پولیس نے آگے جانے سے روکا ہوا تھا۔ اور وہ لڑکا چیخ رہا تھا کہ اس کی معذور بوڑھی ماں اندر رہ گئی ہے۔

یہ تمام مناظر دیکھ کر پھر ایک بار فون ملایا تو پتا چلا کہ چار گاڑیاں فائر بریگیڈ کی پچھلے آدھے گھنٹے پہلے فائر اسٹیشن سے جائے وقوعہ کیلئے نکل چکی ہیں۔فائر اسٹشن متاثرہ جگہ سے آدھے کلومیٹر کے فاصلے پہ اردو یونیورسٹی پہ واقع ہے جس کی مسافت شاید ایک سے ڈیڑھ منٹ سے زیادہ نہیں۔اس سے پہلے کہ فائر بریگیڈ کے عملے کو ہم جھوٹا تصور کرکے مغلظات بکنا شروع کرتے کہ ایک دوست نے خبر دی چار گاڑیاں اسٹیشن سے تو روانہ ہوئی تھیں لیکن چونکہ اردو کالج سے ایکسپو جانے والا روڈ وزیر اعظم کی آمد کی وجہ سے سیل کردیا گیا ہے اور گاڑیاں رانگ آرہی تھیں۔اور پولیس بھی ٹریفک سنگل ٹریک پہ اپ لوڈ کررہی تھی ایسے میں فائر بریگیڈ کی گاڑیاں ٹریفک میں تیس منٹ سے پھنسی ہوئی ہیں۔وزیر اعظم صاحب کی اور دیگر وی آئی پیز کی موؤمنٹ تھی۔آگ بجھانے والی گاڑیاں کیسے چھوڑی جاسکتی تھیں۔آخر خدا خدا کرکے کم و بیش پینتالیس منٹ گذرنے کے بعد پہلی آگ بجھانے والی گاڑی پہنچی اور آخر کار آگ بجھانے کا سلسلہ شروع ہوا۔

چیخ و پکار کا عالم تھا۔لوگ چیخ رہے تھے کہ ارے کوئی فائربریگیڈ کو بلاو۔ساتھ ہی ملحقہ فلیٹس کی گیلیری تک آگ کے شعلے بلد ہورہے تھے۔اھل محلہ گھروں سے پائپ لگاکے پانی ڈالتے رہے فائر بریگیڈ کی ایک گاڑی آگ بجھارہی تھی جبکہ شدت اتنی تھی کہ ضرورت کم ازکم ۸گاڑیوں کی تھی۔ایسے میں علاقائی ایم این اے مزمل قریشی بھی نظر آئے۔ایک صاحب مستقل ان سے بدتمیزی کررہے تھے کہ اب آئے ہو ہم مرجاتے پھر آتے ابھی سے کیوں آگئے۔اور فائر بریگیڈ کیوں نہ لائے۔اور شاباش ہے اس ایم این اے پہ جو خاموشی سے سرجھکائے یہ ساری باتیں سنتا رہا لیکن اس نے نہ جواب دیا یا یہ نہ کہا کہ بھائی میں ایم این اے ہوں ٹریفک سارجنٹ نہیں یا فائراسٹیشن ماسٹر نہیں۔

بالآخر کفر ٹوٹا خدا خدا کرکے اور ایم این اے صاحب کے سامنے ہی گھنٹہ گذرنے کے بعد دوسری اور تیسری گاڑی پہنچی اور آگ پہ قابو پایا گیا۔اور بات بھی سچ ہے کہ وزیراعظم اور وی آئی پیز کی موؤمنٹ اہم ہے بنسبت فائبریگیڈ کی موؤمنٹ کے کیونکہ جو آگ لگی تھی وہ کسی سرمایہ دار کے گھر نہیں لگی جو سب کچھ جل کے راکھ ہوا تھا وہ سے وزیر مشیر سینٹر کا آستانہ عالیہ نہیں غیرقانونی کچی جھگّی بستی تھی۔ان غریبوں کا تو جینا مرنا ہے ہی برابر۔ہم تو بلاوجہ ہی کھڑتے رہے کہ بھئی اسکواڈ میں فائر بریگیڈ کی دو گاڑیوں کا کوور ضروری ہے یاان کمی کمینوں کا بچنا ضروری ہے¿سوچنے والی بات ہے۔

کم و بیش ساڑھے چار بجے تک بحیثیت عینی شاہد یہ تحریر کررہا ہوں کہ کوئی ایڈمنسٹریٹر کوئی کمشنر کوئی میونسپل ایڈمنسٹریشن کا افسر جائے وقوع پہ نہیں پہنچا۔اور صحیح بات ہے ان کے ضلعے میں وزیراعظم آئے ہوئے تھے ٹاون کی حدود میں وی آئی پیز کی موجودگی تھی۔کرپٹ اور سیاھ بیوروکریسی ان کے جوتے سیدھے کرتی یا ان کنگلے بھوکے ننگوں کو بچانے آتی۔

اہل محلہ نے بھرپور تعاون کیا۔گھروں سے کھانے پینےکا سامان  آیااور یہ بھکیڑا شام تک سمٹ ہی گیا لیکن وزیر اعظم کو تو شاید خبر تک نہ ہو پائی ایک بستی عین اس جگہ جہاں آپ تشریف لائے تھے آپ کی سیکیورٹی کی نظر ہوکر خاکستر ہوگئی۔لیکن تمام اختلافات و اتفاقات کے باوجود یہ مان لینے میں کوئی حرج نہیں کہ ایم کیو ایم اور اس کا بےلوث سیاسی کارکن اس شہر میں زندگی کی رمق کا ضامن ہے

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s