ڈاکٹر عامر لیاقت اور انکا عمران

۱۱دسمبر کا جنگ اخبار جو اٹھایا تو عامر لیاقت حسین کے کالم پہ نظر پڑی جو واقعی بہت اعلی پائے کی تحریر ہے جس میں آپ نے ابن صفی کے کرداروں کو ۲۰۱۵ میں فٹ کرنے کی کوشش کی۔ابن صفی و مظہر کلیم کے بعد اب ڈاکٹر صاحب نے عمران سیریز لکھنا شروع کی ہے

لیکن ڈاکٹر صاحب کی عمران سیریز سے ہمیں شدید اختلاف ہے۔ڈاکٹر صاحب کی اس تحریر کے بعد یقیناً ابن صفی کی روح بھی اتنی ہی تڑپی ہوگی جتنے کہ ہم تڑپے۔ ابن صفی کا عمران بے شک حماقتوں ، چرب زبانی و ذہانت کا حسین امتزاج تھا وہ ایک ہیرو کا کردار تھاوہ دہری شخصیت کا حامل ضرور تھا پر اعلی کردار تھا وہ کردار کا بھی غازی تھا تو گفتار کا بھی غازی۔اسکے ہوتے جولیا اپنے آپ کو محفوظ سمجھتی تھی تمام خلوتی جلوتی کنٹینروں کے ہوتے بھی جولیا و تھریسیا سمیت تمام عورتیں عمران کے کردار کی ضامن تھیں۔ابن صفی یا مظہر کلیم کی کسی تحریر میں ہیرو عمران نے ناچ مجرے کی ناکامی کے نتیجے میں پاک لینڈ کے افسروں کی پتلونیں گیلی نہیں کروائیں ٹینڈیا کی تقسیم کو بھی غلط نہیں کہا۔وہ سر رحمان کا بیٹا تھا پرنس تہمور علی خان تھا لیکن باپ کے نام کو استعمال کیئے بغیر ایکس ٹو بنا تھا۔یعنی ایمپائر اسکے گھر کے تھے لیکن اسنے کبھی ایمپائر کی انگلی پہ بھروسا نہیں کیا۔وہ غیر ملکی مہم کے دوران دسیوں بار مختلف شراب و شباب کی محافل میں گیا پر کڑک نوٹ کا استعمال تو کجا اس نے تو کبھی گلاس تک کو ہاتھ نہ لگایا۔

ڈاکٹر کیا یہ تمام خواص آپکے عمران میں ہیں یقیناً نہیں آپکا عمران تو ایمپائر کی انگلی کے اشارے پہ پراچی پرچی پہ گیا اور جب پراچی میں دال نہ گلی تو ائمپائر کو زچ کرنے ٹینڈیا پہنچ گیا۔جس جیکال کی عمران سے جان جاتی تھی اسی جیکال سے آپکا عمران منت سماجتیں کرکے ملنے گیا۔آپکا عمران تو جیکال کی مسکراہٹ تک نہ سمجھ سکا۔آپکا عمران کڑک نوٹ سونگھنے والا عمران ہے ابن صفی کا عمران اعلی کردار کا حامل ہوا کرتا تھا۔وہ نہ عیاش تھا نہ بدتمیز نہ غدار۔وہ زبان تو بہت لمبی رکھتا تھا پر اس نے کبھی بھی واہیات زبان استعمال نہ کی۔اسکی زبان سے ہمیشہ ماوں بہنوں کو تقدیس نصیب ہوئی نہ کہ واہیات گالیاں۔اور ڈاکٹر صاحب سب سے بڑا فرق یہ کہ ابن صفی کا عمران پاجامہ زیب تن کرنے والا عمران تھا جبکہ آپکے عمران کو تو پاجامے والوں سے ہی نفرت ہے۔
اسلیئے آپکا عمران فیل ہوا اور ذلت آپکے عمران کا مقدر بنی آپ اپنے عمران  کو خدارا اس عمران سے تو دور ہی رکھیں۔اور ابن صفی کی روح سے معذرت بھی کریں۔

ڈاکٹر صاحب خدا آپکو آباد رکھے اور آپکے والدین کو کروٹ کروٹ جنت الفردوس کے مقامات عطا ہوں لیکن آپکے عمران نے جو جیکال سے ملاقات کی ہے اگر ایسی ہی کوئی ملاقات پراچی کی جماعت کے قاعد کرلیتے تو عمران کے ائمپائر کے سارے جائز ناجائز بچے کیسے چیخم  چلا مچائے ہوتے۔رات ۹ سے ۱۱ ایجنٹ ایجنٹ کا پروگرام چل رہا ہوتا لیکن آپکے عمران پہ سب چپ ہیں کیونکہ کہیں نہ کہیں ائمپائر کا دونمبری آسراء آج پھر آپکا عمران ہی ہے۔

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s