نیشنل ایکشن پلان اور کراچی

image

نیشنل ایکشن پلان کے تحت کراچی آپریشن اپنی تمام تر کامیابیوں ناکامیوں اچھائیوں اور برائیوں کیساتھ اپنے بھرپور جوبن پر ہے۔عمومی مشاہدہ ہے کہ اس قسم کے آپریشنز جتنا طول پکڑتے ہیں انکے ثمرات اتنا ہی زائل ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔خرابیوں کی نئی راہیں کھل جاتی ہیں۔معاشرے کو جرائم سے پاک کرنے کیلئے کئے جانا والا کوئی بھی آپریشن جتنا برق رفتاری سے ختم ہوگا اتنے ہی مثبت ثمرات معاشرہ پائےگا۔یہ جتنے طویل ہوتے جاتے ہیں اتنے ہی متنازعہ ہوتے جاتے ہیں۔ایسے آپریشن کتنے ہی ناگزیر کیوں نہ ہوں پر کامیابی کیلئے برق رفتاری شرط ہے۔

نیپ پہ متفق ہونے کےبعد کراچی آپریشن کو ہر سیاسی جماعت و ہر طبقہ فکر کی بھرپور حمایت حاصل ہوئی۔اس آپریشن کے نتیجے میں ٹارگٹ کلنگ کا ۹۰فیصد خاتمہ ہوا ہے بھتہ پرچی میں بھی کافی کمی واقع ہوئی ہے الیکشن انتہائی پرامن انداز میں منعقد ہوئے لیکن ابھی تک اسٹریٹ کرائمز و ڈکیتی کم نہ ہوئی بلکہ محدود اعداد و شمار کیمطابق اسٹریٹ کرائمز و ڈکیتیوں کی شرح میں بہت حد تک اضافہ ہی ہوا ہے۔جہاں آپریشن کے نتیجے میں کامیابیوں پہ خوش ہونے کی ضرورت ہے وہیں اسکے تمام منفی پہلوؤں سے نظریں چرانا اور انکا تدارک نہ کرنا کراچی اور پیراملٹری فورس کے ساتھ حقیقی زیادتی ہوگی۔

یہ وضاحت کردیں کہ کراچی آپریشن ناگزیر تھا۔آنے والا وقت ثابت کردےگا کہ اس آپریشن کی کامیابی کراچی کی کامیابی ہے۔لیکن اس آپریشن کو ناکام بنانے کی کوشش کرنے والے عوامل پہ بھی نظر رکھنا ہوگی اور اس آپریشن کے منفی پہلوؤں کو نظر انداز کرنا کراچی اور پیراملٹری فورس  کیساتھ ظلم ہوگا کیونکہ آپریشن میں کراچی والوں اور پیراملٹری فورس نے ہی قربانی دی ہے باقی سب نے تو صرف سیاست ہی کی ہے۔

اب جبکہ ۲۰۱۶ کی ابتداءہے تو یہ طویل ہوتا نظر آرہا ہے۔کیونکہ حال فی الحال تو اسکا دائرہ کراچی سے باہر جاتا نظر ہی نہیں آتا۔جبکہ سانگھڑھ و خیر پور و شکارپور ہجیسے واقعات اور بم دھماکے کراچی میں ہوئے ہوتے تو نہ جانے کیا سے کیا ہوچکا ہوتا۔ کچھ ایسا تاثر ابھررہا ہے کہ کراچی میں رہنے والا ملزم تو مجرم ہے دہشت گرد ہے دہشت گردوں کا سہولتکار ہے لیکن اندرون سندھ دہشت گرد ڈاکیت چور راہزن اغواء برائے تاوان اور دہشت گردوں کا سہولت کار ہونا جرم نہیں۔  

عامر خان،قمر منصور کو تو ملک سے باہر جانے کیلئے اجازتیں درکار ہیں جبکہ مظفر ٹپی منظور کاکا و شرجیل انعام میمن کو ای سی ایل میں نام ہونے کے باوجود جہاز تک میں بٹھاکے وی آئی پی پروٹوکول میں روانہ کرایا گیا اور باقیوں کو روانہ کرایا جارہا ہے۔ڈاکٹر عاصم ہوں عامرخان ہوں قمر منصور ہوں یا کیف الوریٰ ہوں انکا تعلق چونکہ کراچی سے ہے اسلیئے انکو اٹھاتے وقت یہ نہیں سوچا گیا کہ آیا ان پہ کوئی ایف آئی آر ہے بھی یا نہیں ان پہ جتنی ایف آئی آرز کٹیں وہ دوران حراست کٹیں۔جبکہ داعش کے سہولتکار ملاعبدالعزیز یا دیگر کالعدم تنظیموں کے اراکین و سہولتکاروں کی گرفتاری کیلئے ایف آئی آر اور وجوہات ڈھونڈی جارہی ہیں۔

ڈاکٹر عاصم ہوں ،عامرخان ہوں قمر منصور ہوں یا سوئی سدرن گیس کمپنی کے ڈی ایم ڈی شعیب وارثی ہوں ان سب کے ۹۰روزہ ریمانڈ کے بعد عدالتوں میں یہ رپورٹ پیش کی گئی کہ یہ لوگ دہشت گردوں کے سہولتکار رہے ہیں۔ ڈاکٹر عاصم پہ انتہائی عجیب سی سہولتکاری ڈالی گئی ہے کہ ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کے زخمیوں کا علاج کیاہے ۔کیا عجیب سی صورتحال ہے اگر علاج یا زخمیوں کے علاج کی بنیاد پہ سہولتکار ہونا ہی جرم ہے تو جی ایچ کیو حملہ کیس کے مرکزی ملزم ڈاکٹر عثمان کا علاج کیوں سی ایم ایچ میں کیا گیا تحریک طالبان کے کسی رہنما کا علاج شوکت خانم میں کیوں ہوا اسی طرح بہت سے سوالات ہیں کیونکہ ڈاکٹر کا کام علاج ہے نہ شناختی کارڈ دیکھنا اس لیئے اس بنیاد پہ ڈاکٹر عاصم کا ریمانڈ در ریمانڈ لیا جانا سو فیصد غلط ہے۔

بہت سی باتیں ہیں جن کے نتیجے میں کچھ ایسا تاثر جنم لے رہا ہے کہ اب نشانہ صرف کراچی والے ہی ہیں۔اس تاثر کو ختم کرنے کی اشد ضرورت ہے کہ نذیر حسین ہسپتال کیلئے زکوۃ فطرہ لینا جرم جبکہ شوکت خانم کیلئے زکوۃ فطرہ اکٹھا کرنا عین جائز اور ثواب ہے

اگر یہ زخموں سے چور پر زندہ دل دلیر قوم نیشنل ایکشن پلان پہ حکمرانوں کی غیر مشروط حمایت کرتی ہے تو اسکا یہ حق ہے کہ نیشنل ایکشن پلان سو فیصد غیر متنازعہ رہے۔کہیں سے بھی اگر زبان رنگ و نسل یا پسند نا پسند کی بنیاد پہ ایکشن ہوا تو یہ نیپ کی ناکامی ہوگی۔ جو ہوگیا سو ہوگیا اور جو کہیں کچھ غلط ہوگیا تو آئیندہ بہتر کرنے کی کوشش کیساتھ پچھلے غلط کے ازالے کی نیت کرکے آگے بڑھا جائے۔اور ملک و بالخصوص کراچی میں جاری آپریشن کے سلسلے میں مانیٹرنگ کمیٹی بنائی جائے۔تاکہ اگر کسی طرف سے کوئی شکایت آئے تو اسکا ازالہ کیا جاسکے

Advertisements

Author: Junaid Raza Zaidi

The Only Sologon is Pakistan First

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s