رات کی ڈاءری صبح کی تحریر *

Junaid Raza Zaidi

رمضان اپنی مخصوص برق رفتاری کے ساتھ گذرا جارها هے. هم واضح کر دیں که اس سیاسی ڈایری کے صفحے سے قاری کا متفق هونا ضروری نھیں.کسی کی بھی دل آزاری کی صورت میں هم معافی کے طلبگار هیں.

آج کی ڈاءری سویرے سویرے ایک مصدقه اطلاع په بات کرتے هیں که”عارف علوی صاحب کی سربراھی میں پیپلز پارٹی سندھ کی قیادت سے پی ٹی آیی سندھ کی قیادت کے مذاکرات کامیاب هوگیے هیں که هم آپ کو ایڈجسٹ کریں گے کے پی کے میں آپ همیں سندھ میں کمپنسیٹ کرو.”

اس خبر په تبصره آپ په چھوڑتے هویے صرف روزنامه دنیا میں مورخه 15 جولایی کا حسن نثار صاحب کے کالم کا ایک جمله لکھیں گے که”جو لوگ پاکستان کے موجوده حکمرانوں سے گڈ گورننس کی توقع رکھنا ایسا هے جیسا که بھانجھ عورت سے اولاد بھتر هے ٹیسٹ ٹیوب بے بی کا انتظام کیا جایے ورنه 18 کروڑ…

View original post 124 more words

رات کی ڈاءری صبح کی تحریر *

رمضان اپنی مخصوص برق رفتاری کے ساتھ گذرا جارها هے. هم واضح کر دیں که اس سیاسی ڈایری کے صفحے سے قاری کا متفق هونا ضروری نھیں.کسی کی بھی دل آزاری کی صورت میں هم معافی کے طلبگار هیں.

آج کی ڈاءری سویرے سویرے ایک مصدقه اطلاع په بات کرتے هیں که”عارف علوی صاحب کی سربراھی میں پیپلز پارٹی سندھ کی قیادت سے پی ٹی آیی سندھ کی قیادت کے مذاکرات کامیاب هوگیے هیں که هم آپ کو ایڈجسٹ کریں گے کے پی کے میں آپ همیں سندھ میں کمپنسیٹ کرو.”

اس خبر په تبصره آپ په چھوڑتے هویے صرف روزنامه دنیا میں مورخه 15 جولایی کا حسن نثار صاحب کے کالم کا ایک جمله لکھیں گے که”جو لوگ پاکستان کے موجوده حکمرانوں سے گڈ گورننس کی توقع رکھنا ایسا هے جیسا که بھانجھ عورت سے اولاد بھتر هے ٹیسٹ ٹیوب بے بی کا انتظام کیا جایے ورنه 18 کروڑ لوگوں کے گھر کا آنگن سونا هو جایے گا”

بات یه هے که ان سے آگے لکها نھیں جاسکتا لیکن ایک جملے کا اضافه کرتے هویے که “همارے ملک کی ایلیٹ کلاس پچھلے 65 سال سے هر کچھ عرصے کے بعد اسی بھانج عورت سے بار بار نکاح کرتی هے اور تبدیلی کے نام کے ساتھ اگلے پانچ سال آپ سے لکهواتے هیں.هم سے پڑھواتے هیں”

آخر میں هم فاروق ستار بھایی کے عاصمه شیرازی کو ڈان نیوز کو دیے گیے وضاحتی انٹریو کا ذکر کرتے چلیں که برطانوی سامراج و پاکستانی باقیات کے عشق سے ڈاکٹر صاحب نے پرده اٹھا یا هے.اس کی ویڈیو ٹوءٹر هینڈل
@junaid890
سے share کی جاسکتی هے.کل اس په مفصل پیج لکیں گے.انشاءالله.

جے رضا زیدی
بتاریخ 17/جولاءی/٢٠١٣

رات کی ڈاءری صبح کی تحریر *

Junaid Raza Zaidi

آج مورخه 15 جولاءی کو پانچواں روزه بھی پر لگاکے اڑچکا هے.آج کے اخبارات کے مطالعے کے دوران جنگ اخبار مورخه 15 جولاءی حامد میر صاحب کا کالم نظروں سے گذرا.
دور حاضر کی صحافی برادری میں حامد میر اک اهم مقام رکھتے هیں لیکن قلم کمان کا ھیڈر پڑھ کے کچھ ایسا لگا که کسی گهرے کنویں سے کوءی ڈوبتی آواز آیی “الطاف حسین پهر بچ جاییں گے؟”

پهلے پیرا میں آپ نے بی بی سی کی ڈاکیونٹری کے حوالے سے بات کی جس میں شھید انقلاب ڈاکٹر عمران فاروق  اور منی لانڈرنگ کا آپ نے ذکر کیا تو منی لانڈرنگ ایک بایی لیکٹرل قانون هے اور ابھی تک کھیں کسی برطانوی ادارے میں کویی فارمل کمپلین ابھی تک رجسٹرڈ نھیں هے.عمران فاروق بھایی شھید کی بیوه شمایله باجی کا الطاف حسین بھایی په اظھار اعتماد جو که هم نے جیو هی په سنا سازشی عناصر اور چڑی بازوں…

View original post 615 more words

رات کی ڈاءری صبح کی تحریر *

آج مورخه 15 جولاءی کو پانچواں روزه بھی پر لگاکے اڑچکا هے.آج کے اخبارات کے مطالعے کے دوران جنگ اخبار مورخه 15 جولاءی حامد میر صاحب کا کالم نظروں سے گذرا.
دور حاضر کی صحافی برادری میں حامد میر اک اهم مقام رکھتے هیں لیکن قلم کمان کا ھیڈر پڑھ کے کچھ ایسا لگا که کسی گهرے کنویں سے کوءی ڈوبتی آواز آیی “الطاف حسین پهر بچ جاییں گے؟”

پهلے پیرا میں آپ نے بی بی سی کی ڈاکیونٹری کے حوالے سے بات کی جس میں شھید انقلاب ڈاکٹر عمران فاروق  اور منی لانڈرنگ کا آپ نے ذکر کیا تو منی لانڈرنگ ایک بایی لیکٹرل قانون هے اور ابھی تک کھیں کسی برطانوی ادارے میں کویی فارمل کمپلین ابھی تک رجسٹرڈ نھیں هے.عمران فاروق بھایی شھید کی بیوه شمایله باجی کا الطاف حسین بھایی په اظھار اعتماد جو که هم نے جیو هی په سنا سازشی عناصر اور چڑی بازوں کے منه په اک چماٹ هے.

آپ نے دوسرے پیرا میں دو افراد کا ذکر کیا میرے بھت محترم جن کا آپ ذکر کر گیے ان کے هتھے اجمل صدیقی چڑھے تو اجمل پهاڑی بن گیے صولت مرزا کی جے آیی ٹیز اور اجمل صدیق کی جے آیی ٹیز کیا کیا نھیں بنا حتی که زنده ڈاکٹر عمران فاروق کے مرڈر کی جے آیی ٹیز،تک چھاپ دی گییں تو کیا ان دو کو خالو کی نشانی سمجھ کے سینک کے سینچ کے رکھا میر صاحب اگر کچھ هوتا تو کھینچ کھینچ کے بڑا کیا جاچکا هوتا لیکن کچھ هے هی نھیں کچھ هوتا تو آج تک برطانیه کے حوالے کردیا گیا هوتا.اور رحمان ملک کے حوالے سے آپ نے فیور ازم کی سپورٹ کی یا چیزیں چھپانے کی بات کی تو میر صاحب اجمل صدیقی کی جواینٹ انویسٹیگیشن رپورٹ رحمان ملک کے دور میں هی بنی اور یو ٹیوب په چلی.
اگر کچھ هوتا تو چلتا بھایی ھم عوام کے بھی کچھ مخصوص ذرایع هوتے هیں.

اب کرتے هیں مقدمات کی بات تو ان مقدمات کی کریڈیبلٹی اس کا اندازه اس بات سے لگاییں که اس میں سایکل چوری اور پولیس والے کی ٹوپی کی چوری تک کے مقدمات تھے اور قتل کے مقدمات کی کریڈیبلٹی کا اندازه اس بات سے لگاییں که زنده ڈاکٹر عمران فاروق کے قتل میں الطاف حسین بھایی کی ایف آیی آر تک موجود تھی 
یه سیاسی مقدمات تھے .ایم کیو ایم کا 
NRO
په واضح موقف تھا که عدلیه سے انصاف ملنا چاهیے گناھگار اور بے گناھ کا فیصله غیر جانبدار عدلیه کو کرنا چاهیے.آپ هی کے پروگرام میں حیدر عباس رضوی بھایی نے اس وقت بھی ایم کیو ایم کا یهی موقف واضح کیا تھا اور میر صاحب آپ کو تو یاد هوگا.

آگے چل کے آپ اصغر خان کیس میں اسلم بیگ اور بریف کیس کا ذکر نه جانے کیوں کر گیے جب که آپ جانتے هیں یونس حبیب کی گواھی کو اور یونس حبیب کی وضاحت کو الطاف حسن قریشی اردو ڈایجسٹ والے اور الطاف حسین ایم کیو ایم والے.آپ کے اخبار عوام کی ھیڈ لاین بنی تھی که”الطاف 
حسین نے بریف کیس واپس کردیا 
” ھمیں یاد هے سب کچھ ذرا ذرا تمھیں یاد هو که نه یاد هو”
کاپی آپ کو میل کردی هے.

پنڈی اور خفیه اداروں کے حوالے سے اور کن فون کالز کا آپ نے ذکر کیا هے یه فون کالز گھمانے والی سرکار نے الطاف حسین بھایی کو سندھ کے شھروں کا جی ایم سید بنانے کی سازش کی تھی جو که ناکام هویی اور کیونکه الطاف حسین ان کے کسی گریٹ گیم کا حصه بنے کے لیے نه کل تیار تھے نه آج هیں اور نه کل هوں گے.

آخری الزام آپ نے وهی پرانا لگایا که سیاست میں تشدد تو بھایی جب جشن ایوب منایا گیا اور لیاقت آباد کی سڑکوں سے کورنگی تک جو آگ و خون کی حولی کھیلی گیی جو بربریت کا ننگا ناچ هوا وه سب نے دیکھا اور اس کے گواھ ابھی زنده هیں
الذوالفقار اور بلیک تھنڈر بھی ایم کیو ایم سے پهلے کی تخلیق بلکه بلیک تھنڈر یعنی جماعت اسلامی کی دهشت گرد تنظیم یونیورسٹی میں تشدد کی بنیاد بنی.

ابھی کھیں کویی مقدمه لگا نھیں آپ کے هم عصر پیٹی بھایی تو فرط جذمات میں 14 سال کی سزاییں سنا گیے.

میر صاحب رولنگ پارٹی سے اقتدار کی منتقلی کے بعد سیاسی جماعتوں په مختلف فیزز آتے هیں.

لوگ کهتے هیں ایم کیو ایم صحیح وقت په صحیح پتے کھیلنا جانتی هے اک اشاره کرتے چلیں که آج فیصل سبزواری بھایی کی ٹایم لاین په یه شعر موجود هے کھ
“اس لیے جفاؤں په مجھ کو مسکرانا تھا
اور  اس  ستمگر  کا  حوصله بڑھانا تھا”

J.RAZA ZAIDI
16/7/2013
Twitter handle@junaid890

Media Mafia & MQM

Media Mafia & MQM

1e11de_38d132d139e8b4d9c133340dc5701ebb.jpg_1024If you live in US or follow American media you should know by now that the major channels like CNN and Fox news are completely biased towards either Democratic or Republican parties. That is what exactly the case is for all other channels of US. But when it comes to National interest they all sing the same song. Similarly, other channels around the world are biased towards some ideology. Every now and then we do come across the reports that this media anchor or that media person was involved in fabricating some report to get certain results. With this environment all around the world how could one can think Pakistani Media or British media is going to be completely unbiased or neutral.
There have been numerous reports about BBC for being biased or have charges of corruption. I will get onto the Pakistani Media later but let’s start talking about…

View original post 1,346 more words

Altaf Hussain BBC 2 Documentry – Deconstructed

All TV anchors ignoring this

The Last Blog

Image

Its such a pity, that all those discussing the BBC 2 documentary on Mr Altaf hussain, either lack observation or lack devotion to professional journalism. It is also a fact that today’s intellectual and tv thinkers are nothing as compared to those of yesteryears.

BBC 2 Documentary is miserable compared to the hype that was created before its arrival. Before I further proceed, let me assure you that whether I support altaf hussain/ MqM has nothing to do with the analysis, and if you have better argument or analysis, put it up and don’t judge me.

Question no1, what new information this documentary provides, answer is nothing. All of this was already reported on Pakistani media and a lot more was reported in other media as well.

Secondly, the UK authorities proved that they neither understand our culture, nor understand political humor. Out of three videos shown in the documentary…

View original post 583 more words